انٹر کالجز ویمن والی بال فائنل : ڈگری کالج باچاخان نے فرنٹیئر کالج کی ٹیم کو ایک ہراکر چمپئن ٹرافی اپنے نام کرلی

پشاور(سپورٹس ورلڈ نیوز) ہائیرایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کے زیر اہتمام منعقدہ انٹر کالجز ویمن والی بال ٹورنامنٹ اختتام پذیر ہوگیا،فائنل میچ میں گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج باچاخان نے فرنٹیئر کالج کی ٹیم کو ایک سنسنی خیز مقابلے کے بعد ہراکر چمپئن ٹرافی اپنے نام کرلی ، اس موقع پر نیشنل سوسائٹی فار سپورٹس ڈویلپمنٹ کے چیف ایگزیکٹیوانجینئر اورنگزیب خلیل مہمان خصوصی تھے جنہوں نے ونر اور رنراپ ٹیمو ں کو ٹرافیاں دیدی گئی ۔اس موقع پر فرنٹیئر کالج پشاور کی پرنسپل عذراخورشید ،ڈائریکٹر سپورٹس رحم بی بی اور نجمہ ناز قاضی بھی موجود تھیں۔ہائیرایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ خیبر پختونخواکے زیر اہتمام پشاور میں جاری گرلزانٹر کالجزویمن گیمز کے سلسلے میں فرنٹیئر کالج میں کھیلے جانیوالے انٹر کالجز والی بال ٹورنامنٹ کے فائنل میچ میں گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج باچاخان اور میزبان ٹیم فرنٹیئر کالج کی ٹیموں کے مابین سخت کانٹے دار مقابلہ ہوا،جس میں گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج باچاخان کی ٹیم نے مقابلہ 25-22,25-13,25-21سے جیت لیا،

جبکہ اس سے قبل پہلے سیمی فائنل میچ میں فرنٹیئر کالج کی ٹیم نے گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج تاجوبی بی چارسدہ کو 25-16اور25-14سے ہرایا،دوسرے سیمی فائنل میچ میں گو رنمنٹ گرلز ڈگری کالج باچاخان کی کھلاڑیوں نے گورنمنٹ کالج سٹی گلبہار کو 2-0سے شکست دیکر فائنل کیلئے کوالیفائی کرلیاتھا۔ہائیرایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کے زیر اہتمام منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے نیشنل سوسائٹی فار سپورٹس ڈویلپمنٹ کے چیف ایگزیکٹیوانجینئر اورنگزیب خلیل نے کہاکہ باچاخان کالج اور فرنٹیئر کالج کی طالبات کے مابین والی بال کا کانٹے دار میچ دیکھ کر اندازہ ہوگیاکہ واقعی ہماری خواتین کھلاڑی انتہائی باصلاحیت ہیں اگر انکی سرپرستی کی گئی اور بنیادی وسائل فراہم کی گئی تو کوئی شک نہیں کہ یہی کھلاڑی قومی اور بین الاقوامی سطح پر ملک وقوم کا نام روشن کریں

انہوں نے کہاکہ انہوں نے کہاکہ فرنٹیئر کالج ایک تاریخی اہمیت کا حامل تعلیمی ادارہ ہے جس نے تعلیم سمیت کھیلوں کے شعبے میں بھی کلیدی رول اداکررہی ہے بلکہ اس کالج کو پشاور بلکہ خیبر پختونخوامیں کھیلوں کی اکیڈمی کہاجائے تو بے جا نہیں ہوگا۔انہوں نے این ایس ایس ڈی صوبے میں دیگر کھیلوں کیساتھ خصوصاًخواتین کھیلوں کی ترقی کیلئے بھر پور اقدامات اٹھارہی ہے جس پشاور سمیت خیبر پختونخوامیں کھیلوں کے شعبے میں مثبت تبدیلی آئے گی ۔