رو سی کھلاڑیوں پر ڈوپنگ کا الزام ثابت۔ آئی او سی نے روسی کھلاڑیوں کی ونٹر اولمپک میں شرکت پرپابندی لگاتے ہوئے, اولمپک کمیٹی کو بھی معطل کر دیا گیا

لوسان (سپورٹس ورلڈ نیوز) انٹر نیشنل اولمپکس کمیٹی نے روس کی جانب سے سرکاری سر پرستی میں ڈوپنگ قوانین کی خلاف ورزی کا الزام ثابت ہونے پر رشین اولمپک ایسوسی ایشن کو معطل کرتے ہوئے ونٹر اولمپکس 2018میں روس کی شرکت پر پابندی لگادی ہے۔ اس پابندی کے نتیجہ میں روس کے کھلاڑی روسی پرچم کے ساۂ میں ان مقابلوں میں شر کت نہیں کر سکیں گے البتہ آئی او سی کے پرچم میں شر کت کے اہل ہونگے،آئی او سی کے فیصلہ کے حوالے سے جاری کردہ اعلانیہ مطابق ڈوپنگ اسکینڈل کی تحقیقات کے بعد ونٹر اولمپکس 2018 میں روس کی شرکت پر پابندی عائد کردی گئی ہے ۔ 2014 میں سرکاری سرپرستی میں ڈوپنگ کا الزام سامنے آنے کے بعد انٹرنیشنل اولمپک کمیٹی نے تحقیقات کا آغاز کیا تھا، بعدازاں 17 ماہ کی تحقیقات مکمل ہونے پر اولمپک کمیٹی نے گزشتہ روز روس کے خلاف اپنا فیصلہ سنایا۔

انٹرنیشنل اولپمک کمیٹی نے روسی اولمپک کمیٹی کو بھی معطل کردیا جبکہ آئندہ برس ہونے والے ونٹر اولمپکس میں شرکت پر بھی پابندی عائد کردی گئی۔ تاہم ایسے روسی کھلاڑی جو ڈوپنگ میں ملوث نہیں ہیں، انفرادی طور پر مقابلوں میں حصہ لے سکیں گے۔ دوسری جانب اگر روسی ایتھلیٹس نےتمغے جیتے تب بھی میڈل ٹیبل پر روس کے تمغوں کی تعداد صفر رہے گی۔ یہ بھی یاد رہے کہ یکم نومبر سے اب تک 25 روسی ایتھلیٹس پر تاعمر پابندی عائد کی جاچکی ہے۔ اولمپکس کی تاریخ میں پہلی بار کسی بھی ملک کو ڈوپنگ اسکینڈل پر ایسی سزا دی گئی ہے، جس سے سوویت یونین دور کے بعد روس کو اسپورٹس کے میدان میں تاریخی بحران کا سامنا ہے۔ واضح رہے کہ ونٹر اولمپکس آئندہ برس فروری میں جنوبی کوریا میں ہونے جارہے ہیں. روسی نائب وزیراعظم ویٹالے موٹکوپرروسی ڈوپنگ سکینڈل میں ان کے ملوث ہونے کے معاملے پرتاحیات اولمپک میں کسی قسم کا حصہ لینے پر پابندی عائدکردی گئی ہے ،اس بات کااعلان انٹرنیشنل اولمپک کمیٹی نے کیاہے ۔موٹکوجن پرریو2016مقابلوں سے پابندی عائدکی گئی تھی ،انہیں عالی اینٹی ڈوپنگ ایجنسی کمیشن میکلارن کی رپورٹ میں موردالزام ٹھہرایاگیاتھا،جب وہ روس کے وزیرکھیل تھے۔ایک بیان میں آئی اوسی نے فیصلے کااعلان کیاجس کے مطابق اس وقت کے وزیرکھیل ویٹالے موٹکواورنائب وزیریوری نگورنائیخ کومستقبل میں ہرقسم کے اولمپک مقابلوں میں حصہ لینے سے باہرکردیاگیاہے۔موٹکوروس کی 2018عالمی کپ آرگنائزنگ کمیٹی کے سربراہ بھی ہیں ۔