سُپریم کورٹ آف پاکستان نے شعیب شاہین کی جگہ عامر رانا کو12 دسمبر کو ہونے والے یی ایف ایف الیکشن کی نگرانی کی ذمہ داری سونپ دی

اسلام آباد (سپورٹس ورلڈ نیوز) سُپریم کورٹ آف پاکستان نے شعیب شاہین کی جگہ عامر رانا کو 12 دسمبر کو ہونے والے پی ایف ایف الیکشن کی نگرانی کی ذمہ داری سونپ دی ہے چیف جسٹس نے یہ فیصلہ فیصل صالح کی جانب سے شعیب شاہین پر لگائے جانے والے جانبداری کے الزامات کے بعد لیا۔فیصل صالح حیات نے معززعدالت کے رو برو موقف اختیار کیا تھا کہ شعیب شاہیں انکے حوالے سے متعصب ہیں جسپر عدالت نے انکی تسلی اور تشفی کے لئے انکی (شعیب شاہین) کی جگہ عامر رانا کو انتخابات کی نگرانی کے لئے مقرر کردیا۔ سُپریم کورٹ کے اس حکم کے بعدشعیب شاہین کا گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ انہوں نے سُپریم کورٹ آف پاکستان کی ہدایت کی روشنی میں پی ایف ایف کے غیر جانبدرانہ ،آزادانہ اور منصفانہ انتخابات کے انعقاد کے لئے اپنی ذمہ داری ادا کرتے ہوئے چیزیں سٹریم لائن کر دی ہیں اور اب صرف انتخابات کا انعقاد باقی رہ گیاہے ایسے میں وہ پی ایف ایف کے ایک گروپ کی جانب سے اپنے اوپر بے بنیاد الزامات کے بعد سمجھتے تھے کہ انہیں ان انتخابات کی نگرانی نہیں کرنا چاہیے ۔ ان کا کہنا تھا کہ نہ تو وہ کسی کے خلاف کوئی عناد رکھتے تھے اور نہ ہیں۔ شعیب شاہین کا کہنا تھا کہ جہاں وہ خود اس حالے سے ملنے والی ذمہ داری کی ادائیگی سے معذرت چاہنے والے تھے .
انہوں نے کہا کہ معزز جج صاحبان نے جو مناسب سمجھا وہ کیا ، انکا حکم سر آنکھوں پر کیونکہ انہی کے حکم پر میں نے یہ ذمہ داری سنبھالی تھی ۔ میرے لئے قابل تسکین بات یہ ہے کہ سپریم کورٹ آف پاکستان نے میرے بطور ریٹرنگ آفیسر فیصلوں اور طریقہ کار کو صحیح قرار دیا اور اسی کے مطابق انتخابات کرانے کا حکم دیا ہے۔ یہاں تک کہ سُپریم کورٹ نے الیکشن شیڈول تک میں کوئی تبدیلی نہیں کی۔ جو ظاہر کرتا ہے کہ میں نے جو بھی فیصلے کئے اور طریقہ کار اپنایا وہ صحیح تھا۔