سپورٹس حلقوں کا چیر مین نیب جاوید اقبال کی جانب سے خود شکایات سننے کے اعلان کا خیر مقدم، متعدد شخصیات کا پی ایس بی کی کرپشن کا معاملہ چیرمین نیب کے سامنے لے جانے کا فیصلہ

اسلام آباد (سپورٹس ورلڈ نیوز) چیر مین نیب جاوید اقبال کی جانب سے ملک میں کرپشن کے خاتمہ کے لئے اہم فیصلہ لیتے ہوئے ہر ماہ کے آخری ہفتہ میں بدعنوانی سے متعلق از خود شکایات سننے کے اعلان کے بعد سالہا سال سے ملک میں سپورٹس مافیا کے خلاف جنگ میں مصروف کھیل دوست حلقوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے اور انہوں نے ایک بار پھر نئے جوش اور جذنبے کے ساتھ ملک میں کھیلوں کی تباہی کے ذمہ دار ااور کھیلوں کے نام پر کرپشن کرنے والے حکومتی اداروں کے افسران کے خلاف کیسز نیب میں لے جانے کا فیصلہ کرتے ہوئے اس ضمن میں تیاریاں شروع کر دی ہیں۔گو کہ ماضی میں بھی کئی افراد نے اس حوالے سے نیب اور ایف آئی اے سمیت مختلف اداروں میں کیس دئے تھے جنہیں ان دونوں اداروں کے حکام نے مبینہ چمک کے باعث پس پشت ڈال دیا۔ یہاں تک کے ماضی قریب میں نیب کے ایک انتہائی اہم آفیسر نے پاکستان سپورٹس بورڈ کے سر براہ ڈاکٹر گینجیراکے خلاف ایک درخواست پر بجائے معاملات کی تحقیقات کرنے کے ملک میں کھیلوں کی بہتری کے لئے تجاویز مانگ کر تحقیقات کو ٹھپ کردیا۔ انہوں نے ایسا کیوں کیا ؟ اسکا جواب تو نئے چیرمین نیب کو ان سے کرنا چاہیے۔ سپورٹس مافیاز اور انکے سر پرست سر کاری اداروں کے ذمہ داران کے خلاف طویل عرصہ سے جنگ میں مصروف کئی لوگوں نے آج چیر مین نیب کے اس اعلان کے بعددوبارہ سے حوصلہ پکڑا ہے اور وہ اپنی فائلوں کو اُٹھا کر دوبارہ چیرمین نیب کے سامنے پیش ہونے کے لئے پر تولنے شروع ہو گئے ہیں۔

یاد رہے کہ آج نیب کی طرف سے جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق چئیرمین نیب جسٹس (ر)جاوید اقبال ہرماہ بدعنوانی سے متعلق آخری جمعرات دوپہر 2سے4بجے تک شکایات سنیں گے،جبکہ اس موقع پرنیب کے سینیر حکام بھی موقع پر موجود ہوا کریں گے۔
جاری کردہ اعلامیے کے مطابق شکایات کنندگان کو ہدایات کی گئی ہیںشکایت کنندگان درخواستیں ٹھوس ثبوتوں اور قومی شناختی کارڈ کے ساتھ لائیں۔