اتھلیٹکس : سیف گیمز،اسلامک گیمز اور ایشین جونئیر میں میڈلز کے بعد کامن ویلتھ گیمز کو ٹارگٹ رکھ کر محنت کر رہا ہوں : جیولن سٹار ارشد ندیم

اسلام آباد (سپورٹس ورلڈ نیوز) قومی جیولن سٹار ارشد ندیم نے کہ ہے کہ پاکستان میں جیولن سمیت اتھلیٹکس کے کھیل پر حکومتی توجہ سے پاکستان اتھلیٹکس کے میدان میں کھویا ہوا اپنا مقام دوبارہ حاصل کر سکتا ہے۔ پاکستان کے لئے سیف گیمز،اسلامک سالیڈیرٹی گیمز اور ایشین جونئیر میں میڈلز حاصل کرنے کے بعد کامن ویلتھ گیمز اور ایشین گیمز کو ٹارگٹ رکھ کر محنت کر رہا ہوں،انشاء اللہ ان گیمز میں پاکستان کا پرچم سر بلند کرنے کے لئے اپنا بیسٹ دینے کی کوشش کروں گا ان خیا لات کا اظہار ارشد ندیم نے آج یہاں اسلام آباد میں سپورٹس ورلڈ پی کے ڈاٹ کام کو ایک خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کیا،

ارشد ندیم نے ایک سوال کے جواب میں بتایا کہ انکا تعلق ضلع خانیوال تحصیل میاں چنوں کے گاوں 101/15ایل سے ہے۔اور ایک مزدور کے بیٹے ہیں اور خود بھی اپنے والد کے ساتھ مزدوری کرتے رہے ہیں انکے والد نے انہیں تعلیم کے حصول کے لئے ا سکول بھجوایا جہاں انہوں نے پہلی بار 2012 میں 15سال کی عمر میں جیولن کے مقابلے میں حصہ لیا اور انٹر سکول مقابلہ جیت لیا ۔ وہ اور آج کا دن میں نے پیچھے مڑ کر نہیں دیکھا۔2012 سے 2015تک میں تین سال تک مختلیف ایونٹس میں حصہ لیتا اور جیتتا رہا۔اسی دوران واپڈا سے تعلق رکھنے والے کوچ سید فیاض حسین بخاری نے مجھے جیولن تھرو کرتے دیکھا اور مجھے کم عمری کے باوجود واپڈا میں ملازمت دلوانے میں اہم کردار ادا کیا۔

ارشد ندیم نے بتایا کہ انہوں نے واپڈا جوائن کرنے کے بعد ڈیڑھ ماہ کے اندراپنے کھیل کو کوچ سید فیاض حسین بخاری کی کوچنگ میں امپرو کر کے 2015نیشنل اتھلیٹکس چیمپین شپ میں جیولن میں واپڈا کی نمائندگی کرتے ہوئے نیشنل چیمپئین بن گئے۔انہوں نے بتایا کہ وہ تب سے اب تک مسلسل تین سال سے نیشنل چیمین چلے آنے کے ساتھ ساتھ78.33میڑ تھرو کے ساتھ نیشنل ریکارڈ ہولڈر بھی ہیں یہ ریکارڈ انہوں نے 2016میں گوھاٹی میں ہونے والے سیف گیمز میں بنایا تھا۔ ایک سوال کے جواب میں ارشد ندیم نے بتایا کہ وہ وہ انٹر نیشنل لیول پر پاکستا کے لئے کھیلتے ہوئے ویتنام میں 2016میں ہونے والیایشین جونئیر اتھلیٹککس چیمپین شپ میں پاکستان کے لئے براونز۔ 2016میں ہی گوہاٹی میں ہونے والے سیف گیمز میں پاکستان کے لئے براونز اوررواں سال باکو میں ہونے والے اسلامک سالیدیرٹی گیمز میں بھی براونز میڈل جیت چکے ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ وہ اسوقت اپنے کوچ سید فیاض حسین بخاری کی زیر نگرانی کامن ویلتھ گیمز کو ٹارگٹ کر کے تیاریوں میں مصروف ہیں اور انکی بھر پور کوشش ہوگی کہ وہ اپنے نہ صرف اپنا بیسٹ دیں بلکہ پاکستان کے لئے میڈل بھی جیت کر لائیں انہوں نے ایک سوال کے جواب میں بتایا کہ پاکستان اتھلیٹکس فیڈریشن ہر ممکن انداز مین انکی بہترین سے بہترین تربیت کا اہتمام کر رہی ہے جسکے لئے وہ فیڈریشن کے صدر جنرل (ر) اکرم ساہی اور سیکرتری محمد ظفر سمیت اپنے کوچز بلخصوص سید فیاض حسین بخاری کے بے حد مشکور ہیں جو میرے اوپر بہت محنت کر رہے ہیں۔