وفاقی حکومت پاکستان میں فٹ بال کھیل کو مزید تباہ ہونے سے بچایا جائےْ محمد رمضان پیر جی 

کراچی (اسپورٹس ورلڈ نیوز) ینگ آزاد فٹ بال کلب کا سالانہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے جنرل سیکریٹری محمد رمضان پیر جی نے کہاکہ اس وقت پاکستان میں فٹ بال کھیل تباہی کا شکار ہے کسی بھی ڈسٹرکٹ میں کوئی فٹ بال کا ایونٹ منعقد نہیں ہورہا ہے کھیل میں سیاست کا عمل دخل اور حکومت کی ہٹ دھرمی نے پاکستان میں فٹ بال کھیل کو صدیوں پیچھے دھکیل دیا ہے اس وقت نہ صرف پاکستان کے نامور کھلاڑی مایوس ہیں بلکہ شائقین فٹ بال بھی افسردہ ہیں محمد رمضان پیر جی نے کہاکہ فٹ بال کھیل کو ملک میں عروج دینے میں ہمار ا خون اور پسینہ شامل ہے ہم نے بڑی جد وجہد کے ذریعے پاکستان میں فٹ بال کو مقام عطاء کیا مگر افسوس کہ آج سیاست کے عمل دخل اور حکومتی ہٹ دھرمی اور گروپ بندیوں کی وجہ سے ملک خاص کر کراچی میں شہر میں فٹ بال کی رونقیں مدہم ہوگئیں ہیں رمضان پیر جی نے کہاکہ فٹ بال غریبوں کا کھیل ہے اور اس میں قائم شدہ فٹ بال کلب اپنی مدد آپ کے تحت چل رہے ہیں لیکن اس وقت فٹ بال کھیل کا کوئی پرسان حال نہیں ہے حکومت کو چاہیئے کہ اس کھیل کی سرپرستی کرے لیکن افسوس کا مقام ہے کہ حکومت نے پاکستان فٹ بال فیڈریشن میں ایک اپنا گروپ بنا یا ہوا ہے جس کی وجہ سے ملک میں فٹ بال کھیل تباہی کی جانب گامزن ہے محمد رمضان پیر جی نے کہاکہ ہم فیڈریشن میں عمل دخل پر حکومتی اقدام کی پر زور مذمت کرتے ہیں اور حکومت سے پر زور مطالبہ کرتے ہیں فیصل صالح حیات کابینہ کو بحال کیا جائے اور سندھ فٹ بال ایسوسی ایشن کے ماتحت چلنے والے قانون کو فوری بحال کیا جائے تاکہ صوبے کے فٹ بال کھلاڑی دوبارہ سے اپنی صحت مند سرگرمیاں جاری رکھ سکیں اگر فیفا کی رکنیت بحال اور پاکستان فٹ بال فیڈیشن بحال نہ کی گئی تو پورا پاکستان سراپا احتجاج بن جائیگا ۔