پاکستان پریمیئر فٹبال لیگ میں ریفریز کی کارکردگی بہتر بنانے کیلئے 3 روزہ سیمینار اختتام پذیر ہو گیا

لاہور(سپورٹس ورلڈ نیوز)پاکستان پریمیئر فٹبال لیگ میں ریفریز کی کارکردگی بہتر بنانے کیلئے 3 روزہ سیمینار اختتام پذیر ہو گیا، پی ایف ایف فٹبال ہاوس میں مکمل ہونے والے اس ایونٹ میں 25 مرد، 4 خواتین ریفریز اور 6 انسرکٹرز شریک تھے، شرکائکو اس دوران نہ صرف معلومات کے تبادلے بلکہ فیفا قوانین میں ہونے والی حالیہ تبدیلیوں سے آگاہی کا موقع بھی ملا، اختتامی روز جنرل سیکرٹری پی ایف ایف کرنل (ر) احمد یار لودھی اور نائب صدر پی ایف ایف و صدر پنجاب فٹبال ایسوسی ایشن سردار نوید حیدر نے نمایاں کارکردگی دکھانے والے ریفریز اور انسٹرکٹرز میں انعامات تقسیم کئے۔ اس موقع پر پاکستان فٹبال ریفریز ایسوسی ایشن کے صدر میاں عبدالباری نے سیمینار کی 3روزہ سرگرمیوں پر میڈیا اور شرکائکو بریفنگ دی۔ انہوں نے کہا کہ پی ایف ایف کے تعاون سے چاروں صوبوں اور اسلام آباد میں ریفریز ایجوکیشن پروگرام شروع کئے جائیں گے۔ ریفری انسٹرکٹر صلاح الدین نے کہا کہ پی ایف ایف ریفریز جو جدید معیار کی تربیت فراہم کرنے کیلئے بھاری سرمایہ کاری کر رہی ہے جس کی بدولت پاکستان کے ریفری فیفا ایونٹس میں بھی ذمہ داریاں سرانجام دے رہے ہیں۔ سابق جنرل سیکرٹری پاکستان فٹبال ریفریز ایسوسی ایشن چودھری رشید نے کہا کہ پاکستان کے کوالیفائیڈ ریفریز انسٹرکٹرز نے شرکائکی معلومات میں بے پناہ اضافہ کیا ہے، ایونٹ میں خواتین کی شرکت بڑی حوصلہ افزا ہے۔ جنرل سیکرٹری پی ایف ایف کرنل (ر) احمد یار خان لودھی نے کہا کہ ساڑھے 3 سال تک بیرونی مداخلت کی وجہ سے پاکستان میں فٹبال کی سرگرمیاں متاثر رہیں لیکن اس دوران بھی پاکستان کے ریفریز دیگر ملکوں میں اپنی ذمہ داریاں ادا کرتے رہے، انہوں نے کہا کہ گزشتہ دنوں ختم ہونے والی ایشین گیمز میں ریفری محمد علی نے پاکستان کا نام روشن کیا۔ نائب صدر پی ایف ایف اور صدر پنجاب فٹبال ایسوسی ایشن سردارنوید حیدر نے کہا کہ فٹبال کے فروغ میں ریفرنگ کے شعبے کی اہمیت کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا، پاکستان میں انٹرنیشنل معیار کے مزید ریفریز تیار کرنے کیلئے پی ایف ایف ہرممکن قدم اٹھائے گی