ڈربن ٹیسٹ ، براڈ کی عمدہ بائولنگ ، جنوبی افریقہ مشکل میں

ڈربن(سپورٹس ڈیسک) ڈربن میں جنوبی افریقہ اور انگلینڈ کے درمیان چار ٹیسٹ میچوں کی سیریز کے پہلے ٹیسٹ میچ کے دوسرے دن کھیل کے اختتام پر جنوبی افریقہ نے اپنی پہلی اننگز میں چار وکٹوں کے نقصان پر 137 رنز بنائے تھے۔جنوبی افریقہ کو انگلینڈ کی پہلی اننگز کے سکور 303 کے جواب میں مزید 166 رنز درکار ہیں اور اس کی چھ وکٹیں ابھی باقی ہیں۔ دوسرے دن کے کھیل کے اختتام پر جنوبی افریقہ کی جانب سے ڈین ایلگر 67 اور ٹیمبا بووما دس رنز کے ساتھ کریز پر موجود تھے۔جنوبی افریقہ کا آغاز بھی انگلینڈ کی طرح کچھ زیادہ اچھا نہیں تھا۔ اوپنر وین زیل بنا کوئی رن بنائے آؤٹ ہوئے جبکہ ہاشم آملہ بھی صرف سات رنز ہی بنا سکے۔اس کے بعد ڈین ایلگر اور اے بی ڈیویلیئرز نے تیسری وکٹ کی شراکت میں 86 رنز بنائے۔ ڈیویلیئرز 49 رنز کی اننگز کھیلنے کے بعد براڈ کی گیند پر کیچ آؤٹ ہوئے۔انگلینڈ کی جانب سے براڈ نے تین اور معین علی نے ایک وکٹ حاصل کی۔ڈین ایلگر 67 رنز بنا کر کریز پر موجود ہیںاس سے قبل انگلینڈ نے 179 رنز چار کھلاڑی آؤٹ سے اپنی پہلی اننگز کا دوبارہ آغاز کیا تو پوری ٹیم 303 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی۔کومپٹن 85، سٹوکس 21 اور بیرسٹو 41 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ سٹوارٹ براڈ نے 33 گیندوں پر 33 رنز کی تیز اننگز کھیل کر اپنی ٹیم کو بہتر تین سو تک پہنچنے میں مدد فراہم کی۔جنوبی افریقہ کی جانب سے سٹین اور مورکل چار، چار وکٹوں کے ساتھ نمایاں بولر رہے۔جمعے کو جب میچ کے پہلے دن کے کھیل کا اختتام ہوا تو انگلینڈ کی جانب سے نک کومپٹن 63 اور بین سٹوکس پانچ رنز پر کھیل رہے تھے۔انگلینڈ نے جب اپنی پہلی اننگز کا آغاز کیا تو صرف 49 رنز پر اس کی تین وکٹیں گر چکی تھیں۔کپتان ایلسٹر کک صفر، اپنا پہلا ٹیسٹ میچ کھیلنے والے ایلکس ہیلز دس اور جو روٹ 24 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئے۔تاہم بعد میں نک کومپٹن اور جیمز ٹیلر نے بہترین کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنی ٹیم کو مشکلات سے نکالنے کی بھرپور کوشش کی۔