کامن ویلتھ گیمز ویٹ لفٹنگ چیمپئین شپ کے میڈلسٹ کھلاڑیوں طلحہ طالب اور محمد نوح دستگیر بٹ کو پانچ پانچ لاکھ روپے کی انعامی رقم کے چیک دے دئیے گئے

اسلام آباد (سپورٹس ورلڈ نیوز) کھیلوں کے فروغ اور کھلاڑیوں کی حوصلہ افزائی کے لئے حکومت پاکستان کی پالیسی کے تحت تین سے دس ستمبر تک آسٹریلیا کے شہر گولڈ کوسٹ میں ہونے والی کامن ویلتھ گیمز یوتھ ،جونئیر اور سینئر ویٹ لفٹنگ چیمپئین شپ میں پاکستان کے لئے میڈلز حاصل کرنے والے کھلاڑیوں طلحہ طالب اور محمد نوح دستگیر بٹ کو پانچ پانچ لاکھ روپے کی انعامی رقم کے چیک دے دئیے گئے ہیں۔ کامن ویلتھ گیمز یوتھ ،جونئیر اور سینئر ویٹ لفٹنگ چیمپئین شپ میں شر کت کر کے پاکستان کے لئے گولڈ اور سلور میڈلز جیت کر دو روز قبل ہی پاکستان پہنچنے والے ان کھلاڑیوں کو یہ چیک آج پاکستان سپورٹس بورڈ میں منعوقدہ ایک تقریب کے دوران دئے گئے۔ وفاقی وزیر میاں ریاض حسین پیر زادہ اور سیکر ٹری امجد علی خان نے کھلاڑیوں کو یہ چیک دئے۔

کسی ایونٹ کے جیتنے کے دس دن کے اندر ہی کھلاڑیوں کو انعامی رقم دئے جانے کا یہ واقعہ پاکستان سپورٹس بورد کی تاریخ کا پہلا واقع ہے جس پر وفاقی سیکر ٹری امجد علی خان بلا شبہ مبارکباد کے مستحق ہیں وگرنہ ڈی جی پی ایس بی ڈاکٹر گنجیرا اور وفاقی وزیر میاں ریاض پیرزادہ کھلاڑیوں کو انعامی رقم دینے سے پہلے ناک سے لکیریں نکلوانے کے عادی ہیں۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ بطور چید ڈی مچن ایشین ان ڈور گیمز میں پاکستانی دستہ کے ساتھ جانے والے وفاقی سیکر ٹری وہاں پر قومی خزانی کو لُٹانے اور عیاشیاں کرنے کے کلچر کے حامل افسران کو وہاں کنٹرول کر پاتے ہیں یا نہیں۔ کیونکہ اس دستہ میں شامل ایک انتہائی اہم افسر اس سے قبل ایک ایونٹ کے موقع پر غیر اخلاقی حر کتکر نے کی کوشش کرتے ہوئے اُس ملک کا پولیس سٹیشن کا منہ بھی دیکھ چکے ہیں جنہیں صرف غیت ملکی سر کاری افسر ہونے کی بناع پر وارننگ دے کر چھوڑ دیا گیا تھا۔