1994ہاکی ورلڈ کپ کے ہیرو لیجنڈ اولمپیئن منصور احمد کو آج کراچی میں سپردخاک کردیا گیا.

کراچی(اسپورٹس ورلڈ نیوز) 1994کے ہاکی ورلڈ کپ کے ہیرو لیجنڈ اولمپیئن منصور احمد کو آج کراچی میں سپردخاک کردیا گیا.تدفین میں پی ایچ ایف سیکریٹری شہباز احمد سینئر سمیت بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی.اولمپیئن منصور احمد جو کہ کئی ماہ سے دل کے عارضے میں مبتلا تھے.این آئی سی وی ڈی اسپتال میں زیر علاج سے گزشتہ روز خالق حقیقی سے جاملے.منصور احمد کے علاج کے سلسلے میں پاکستان ہاکی فیڈریشن نے اپنی بساط کے مطابق بھرپور مالی تعاون کیا جبکہ حکومتی سطح پر امداد کے آخری سانس تک منتظر ہی رہے.اولمپیئن منصور احمد 1986 سے 2000 تک پاکستانی ٹیم کا حصہ رہے.اولمپیئن منصور احمد کے جنازے میں پاکستان ہاکی فیڈریشن کے سیکریٹری سمیت بڑی تعداد میں اسپورٹس و دیگر شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی.اس موقع پر پاکستان ہاکی فیڈریشن کے سیکریٹری شہباز احمد سینئر نے وہاں موجود میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اولمپیئن منصور احمد ہمارے ملک کا اثاثہ تھے.منصور احمد صدیوں میں ایک پیدا ہوتا ہے.وہ بہترین گول کیپر ہونے کے ساتھ ساتھ سچے پاکستانی اور اچھے انسان بھی تھے.پی ایچ ایف نے انکے شایان شان تو نہیں البتہ آخری وقت تک ہر ممکن مالی تعاون کیا.جو کہ فیڈریشن پر انکا حق تھا.ہم انکے جانے کے بعد بھی انکی فیملی کے ساتھ رابطے میں رہیں گے اور ہر طرح سے انکے ساتھ تعاون کرتے رہیں گے.انہوں نے مزید کہا کہ اولمپیئن منصور احمد نے جہاں 1994 کے ورلڈ کپ میں گول روک کر کروڑوں پاکستانیوں کے دل جیتے آج انکے انتقال پر کروڑوں پاکستانیوں کے دل خون کے آنسو رورہے ہیں.