پاکستان ہاکی فیڈریشن بے مقصد پیسے لٹانے میں مصروف ہے.موجودہ ہیڈ کوچ فرحت خان نے کبھی کوچنگ نہیں کی انہیں امتحان میں ڈال دیا گیا :اولمپیئن شہناز شیخ

اسلام آباد (اسپورٹس ورلڈ نیوز)  سابق قومی ہاکی کوچ اولمپیئن شہناز شیخ نے کہا ہے کہ پاکستان ہاکی فیڈریشن بے مقصد پیسے لٹانے میں مصروف ہے.موجودہ ہیڈ کوچ فرحت خان نے کبھی کوچنگ نہیں کی انہیں امتحان میں ڈال دیا گیا یے انہوں نے مزید کہا کہ 4 نیشن ہاکی فیسٹول میں قومی ٹیم کی کارکردگی انتہائی مایوس کن رہی ہے.ہماری ٹیم کے اندر انتنی صلاحیت نہیں کہ وہ نیوزی لینڈ یا آسٹریلیا کی ٹیم سے مقابلہ کرسکے ایشیئن ہاکی کپ میں ٹیم کارکردگی سب کے سامنے ہے.ٹیم جسکا مورال  پہلے ہی ڈاؤن تھا اسے بہترین ٹیموں سے کھیلا کر انکے حوصلے مزید پست کردیئے .آسٹریلیا کے ٹور پر جتنی اخراجات کئے گئے اتنے پیسوں میں یورپ کے تین ٹور کئے جاسکتے ہیں.حیرانگی تو اس بات کی ہے ایک طرف پی ایچ ایف فنڈز نہ ہونے کا رونا روتا رہتا ہے دوسری طرف آسٹریلیا کے دورے پر کروڑوں روپے خرچ کئے جارہے ہیں.انہوں نے کہا کہ ہماری ٹیم پرفارمنس کا یہ حال ہے کہ وہ ملیشیاء,بھارت اور جاپان جیسی ٹیموں سے بار بار ہار رہی یے.میں 15-2014 میں ٹیم کا ہیڈ کوچ رہا.میری کوچنگ میں ٹیم جے چیمپیئنز ٹرافی,4 ملکی ٹورنامنٹ سمیت متعدد عالمی ایونٹس میں حصہ لیا.ٹیم 4 سے 3 ایونٹس کے فائنل تک پہنچی.ہم نے 16 سال کے طویل عرصے کے بعد چیمپیئنز ٹرافی کا فائنل کھیلا.بھارت سے 4 میچز کھیلے جس میں دو مہچز میں کامیابی حاصل کی.ایک میچ برابررہا جبکہ چوتھے میچ میں پینلٹی شوٹ پر میچ ہارے .اتنے گول میری کوچنگ کے ددوان پورے سال میں میں نہیں ہوئے جتنے گول 7 میچز میں کھائے.انہوں نے مزید کہا کہ سمجھ سے بالاتر ہے ایسے عجیب و غریب مشورے پی ایچ ایف کو کون دے رہا ہے.اگر کوئی باتھ روم کے  ٹب پر نہائے اور دعوی کرے کہ مجھے سوئمنگ آگئی ہے تو اسے اسکی خام خیالی ہی کہا جائے گا.موجودہ ہیڈ کوچ فرحت خان نے کبھی کوچنگ نہیں کی انہیں امتحان میں ڈال دیا گیا ہے.میں سمجھتا ہوں موجودہ فیڈریشن کو سب سے زیادہ انجوائے کرنے کا موقع ملا ہے.جبکہ سابقہ ادوار میں آصف باجوہ اور رانا مجاہد کا اولمپیئنز نے حشر نشر کرکے رکھ دیا تھا.ٹیم کی ناقص کارکردگی کے باوجود سابق کھلاڑی فیڈریشن کو سپورٹ کررہے ہیں جس کا فیڈریشن کو بھرپور فائدہ اٹھانا چائیے.,پاکستان ہاکی کیلئے سال 2018 بہت ایم ہے..آئندہ سال پاکستان کو سلطان الان شاہ کپ,کامن ویلتھ گیمز,ایشیئن گیمز اور ورلڈ کپ میں حصہ لینا ہے ابھی سے اسکی تیاری کرنی ہے.ڈومیسٹک ہاکی مظبوط کرنے کی اشد ضرورت ہے.