تازہ ترین
بنیادی صفحہ / دیگر سپورٹس / سابق والی بال کھلاڑیوں نےخیبرپختونخوا والی ایسوسی ایشن کےانتخابات خلاف آئین قراردے دیا،دوبارہ الیکشن کرانےکامطالبہ

سابق والی بال کھلاڑیوں نےخیبرپختونخوا والی ایسوسی ایشن کےانتخابات خلاف آئین قراردے دیا،دوبارہ الیکشن کرانےکامطالبہ

پشاور(سپورٹس ورلڈنیوز) صوبہ خیبرپختونخواکے سابق وموجودہ نیشنل وانٹرنیشنل والی بال کھلاڑیوں نے والی بال ایسوسی ایشن خیبرپختونخواوالی بال کے انتخابات کویکسرمسترد کرتے ہوئے ازسرنوانتخابات کامطالبہ کیاہے ،انکاکہناتھاکہ من پسند آفراد کو بند کمرے بلاکر خفیہ طریقے سے انتخابات کرائے ہیںجو خلاف قانونی ہے۔میڈیا سنٹرمیں پریس کانفریس سے خطاب کرتے ہو ئے سابقہ کھلاڑیوں امجدعلی،محمدیونس خلیل،فضل ربی،ہدایت اللہ خلیل،محمدحنیف خان،شاہدحسین،عبدالرحیم،مشتاق خان،غلام مصطفی،محمدشاہ اور پاکستان والی بال فیڈریشن کے سابق سیکرٹری جنرل حاجی محمد اقبال نے5جنوری کوانتخابات کو ڈرامہ قرردیتے ہوئے کہاکہ آئین کی روا سے صوبائی انتخابات سے قبل کلبوں کی سطح پر پھرضلع اوربعدازاں صوبائی وملکی سطح پرکسی بھی ایسوسی ایشن وفیڈریشن کی سطح پرانتخابات ہوتے ہیں ،تاہم بدقسمتی سے صوبائی والی بال ایسوسی ایشن کے اانتخابات میں آئین کوبالائے طاق رکھ کرسلیکشن کرکے اپنے من پسند افرادکولاکر والی بال کھیل وکھلاڑیوں کاجنازہ نکالاگیا،انہوںنے بتایاکہ ہم نے صوبے میں والی بال کی ترقی کیلئے دونوں فریق کے مابین پائے جانے والے اختلافات کو بلاکر ایک پلیٹ فارم پر متحد ہونے کیلئے باہمی مشاورت سے صوبائی والی بال ایسوسی ایشن کے انتخابات کیلئے صوبائی اولمپک ایسوسی ایشن کے صدرسیدعاقل شاہ سے بھی رابطہ کیاتھا جنہوںنے اس اقدام کو خوش آئندقراردیتے ہوئے ہمیں 12جنوری کا ٹائم دیاتھا لیکن مخالف فریق نے ہماری ان کاوشوں پر پانی پھیرتے ہوئے 5جنوری کو غیر آئینی اور غیر قانونی طریقے سے الیکشن کروایا،جسے کسی صورت پر قابل قبول نہیں ،کیونکہ یہ نہ صرف ہمارے ساتھ بلکہ والی بال کھلاڑیوں کے ساتھ بھی دھوکہ ہے یہی وجہ ہے اچھاخاصہ ٹیلنٹ ہونے کے باوجود انٹرنیشنل سطح پروالی بال میںہم ناکامیوںکی ذلت پرپڑے ہوئے ہیں۔انہوںنے صوبہ کے ہزاروں کلبوں کی رجسٹریشن کیساتھ ساتھ ڈائریکٹرجنرل سپورٹس سے مطالبہ ہے کہ والی بال کے انتخابات کو منظورنہ کریں اورازسرنوانتخابات کرانے کے احکامات صادرکرکے صوبے میں والی بال کا مستقبل تباہی سے بچایاجائے ۔